Tag Archives: Urdu

لاہور کے شاہی حمام کا انوکھا نظام

شمائلہ جعفری

یہ آرٹیکل BBC Urdu میں شایع ہوا۔

hamam2

لاہور شہر تاریخ کی ایک کتاب کی طرح ہے، جیسے کتاب کا صفحہ پلٹتے ہی الفاظ سے تراشی گئی ایک نئی تصویر ابھرتی ہے اسی طرح سر زمین لاہور کے سینے کو کریدیں تو ہر کونے میں خطے کی خوبصورت ثقافت اور روایتوں کی نئی داستان سامنے آتی ہے۔
ایسا ہی کچھ ہوا ہے اندرون شہر کے دلی دروازے میں جہاں مغلیہ دور کے شاہی حمام کی کھدائی میں ایک انتہائی سائنسی انداز میں بنا نظام دریافت ہوا۔
دلی دروازے کی شاہی گزرگاہ میں جڑا پہلا نگینہ مغلیہ دور کا یہ حمام ہی ہے جو سنہ 1634 میں شاہ جہاں کے گورنر وزیرخان نے عام لوگوں اور مسافروں کے لیے تعمیر کروایا۔ ماہرین کے مطابق یہ مغلوں کا واحد عوامی حمام ہے جو اب تک موجود ہے۔

hamam3

تاہم اب اس کی عمارت میں بہت سی تبدیلیاں آ چکی ہیں۔ 50 کمروں کے اس حمام کی تزئین وآرائش کو دیکھ کر یہ تاثر ملتا ہے کہ حمام صرف نہانے دھونے کے لیے استعمال نہیں ہوتا تھا بلکہ یہ لوگوں کے میل ملاپ اور ذہنی آسودگی کی جگہ بھی تھی۔

Continue reading

لٹریچر فیسٹیول۔ اُردو سے زیادہ انگریزی میں

کشور ناہید

llf3


ہال نمبر4میں کل 70 کرسیاں لگی تھیں۔ کم از کم 500 لوگ اندر آنا چاہتے تھے۔ مسئلہ بھی ایسا تھا۔ عبداللہ حسین کے ساتھ ایک گھنٹے کا پروگرام لاہور لٹریچر فیسٹیول میں ہونا تھا۔ شائقین فیصل آباد، اندرون شہر لاہور، شیخوپورہ، گوجرانوالہ اور لاہور کے سارے کالجوں سے آئے تھے۔ وہ سب عبداللہ حسین کو دیکھنا اور سننا چاہتے تھے مگر ہال کے اندر گنجائش صرف 70 بندوں کی تھی۔ اس وقت بڑے ہال میں کرکٹ پر مذاکرہ ہورہا تھا۔ اس میں گنجائش 750 لوگوں کے بیٹھنے کی تھی۔ بتانا مقصود یہ ہے کہ اول تو اردو ادب سے متعلق سیشن آٹے میں نمک کے برابر رکھے گئے تھے۔ ان کے لئے بھی چھو ٹے ہال منتخب کئے گئے تھے۔ جبکہ سیاسی موضوعات سے لیکر ملکہ ترنم، نصیرالدین شاہ اور سارے غیرملکی ادیبوں کے لئے بڑے ہال محفوظ کئے گئے تھے۔ Continue reading

A passage from Bapsi Sidwas book : Beloved City

For, above all, Lahore is a city of poets. Not just giants like Allama Iqbal or Faiz Ahmed Faiz, but a constellation of poets. Given half a chance, the average Lahori breaks into a couplet from an Urdu ghazal, or from Madho Lal Hussain or Bulleh Shah’s mystical Punjabi verse and readily confesses to writing poetry. But if I toss up the word “Lahore” and close my eyes, the city conjures up gardens and fragrances. Continue reading

Saray Jahan Mein Dhoom Hamari Zubaan Ki Hai

* Mahmood has written Urdu in Persian and Roman English scripts in an overlapping design

LAHORE: Tongue in Cheek – artist Shoaib Mahmood’s latest exhibition opened at the Drawing Room Art Gallery on Monday. The artwork, a reflection of what the artist has seen and observed in society, delighted art enthusiasts with its imagery and artistic beauty.Language

Mahmood has used two statements that have been ingeniously written in his artwork: ‘Saray Jahan Mein Dhoom Hamari Zubaan Ki Hai’ (Our language is popular in the entire world) and ‘Urdu Europi Zubanon Ki Yulghaar Mein Jaan-e-Balab Hai’ (Urdu faces extinction because of the domination of European languages). Continue reading

‘Hotel Mohanjodaro’, staged by the Ajoka Theatre

LAHORE: A group photograph of Governor Salmaan Taseer and performers of the play ‘Hotel Mohanjodaro’, produced by the Ajoka Theatere at the Al-Hamra Arts Council. APP

Yasser Hamdani at Chowk writes: We must learn a lesson from Abbas’s prophecy and stop this decay before it consumes us, as Pakistanis and as Muslims. Even as a has no real conception of clergy. Repeatedly the Quran calls upon the Muslims to live their own lives without interferences from the holy men and witchdoctors. Then why are we tolerating the Mullah in the name of ? The Mullah is no defender of . He is a parasite sucking the very life blood out of our . Obscurantism and retrogressive will lead us no where but to total destruction. We will be humiliated and in the words of Iqbal ‘tumhari dastan tak bhee na ho gi dastanon mein’. The Muslims world over should decry this unnatural priesthood conferred upon the mullah.

Watch the video clips below: Continue reading